فری لانسینگ کی دنیا میں سپوکن یونیورسٹی کے انقلابی اقدامات


(سپوکن یونیورسٹی میڈیاسیل رپورٹ)خیبر پختونخواہ کی تاریخ میں پہلی بار کسی بھی نجی تعلیمی ادارے کا یہ ایک اتنا حیرت انگیز اقدام ہے کہ آنے والے کچھ ہی مہینوں میں طلبا کو اس کے انتہائی دورس نتائج دیکھنے کو ملینگے.سپوکن یونیورسٹی نے فری لانسینگ کے حوالے سے ایک ایسا بہترین پلان بنایا ہوا ہے کہ جس سے نہ صرف طلبا کو بھرپور فوائد ملینگے بلکہ اُنکے والدین کے لیے بھی باعث فخر و آرام ہوگا کہ انکے بچے نہ صرف سیکھ رہے ہیں‌بلکہ کماکر اپنے تعلیمی اخراجات بھی برداشت کر رہے ہیں.سپوکن یونیورسٹی نے فری لانسینگ کے لیے ایک بہت ہی بہترین اور خوبصورت پلان ڈیزائن کیا ہوا ہے.سپوکن یونیورسٹی کے تمام طلبا کے لیے فری لانسینگ کی بیسیک ٹریننگ ناصرف فری ہے بلکہ اسکے ساتھ ساتھ انگلش گرائمر کی کلاس بھی اٹیچ کر دی گئی ہیں جوکہ طلبا کے لیے بلکل فری ہے اور مزے کی بات یہ ہے کہ یہ گرائمر کی کلاس مسٹر یحیٰی نیازی لے رہے ہیں جنکا انگلش گرائمر میں‌تجربہ کم از کم بائیس سال ہے.سپوکن یونیوسٹی میں جب ایک طالب علم انگلش سیکھنے کے لیے آتا ہے تواُس طالب علم کو انگلش کے علاوہ وہ تمام ہتھیار مل جاتے ہیں جو کہ دور جدید میں اگے بڑھنے اور ترقی کے دوڑ میں شامل ہونے کے لیے لازم ہے. کمپیوٹر کی بیسک ٹریننگ بغیر کسی خرچے کے بالکل فری ہے ایک طالب علم جب انگلش سیکھنے کے لیے آتا ہے تو لازمی امرہے کہ اُس کو کمپیوٹر پر بھی مہارت حاصل ہونی چاہیے لیکن ہمارے ہاں ایسا کوئی طریقہ کار نہیں کہ جس سے ایک جگہ طالب علم کو ٹریننگ دے کر تیار کرکے اس قابل بنایا جائے کہ وہ معاشرے پر بوجھ نہ بن سکے اسی لیے ہم نے یونیورسٹی میں‌اندر آنے والے اپنے طلبا کے روشن مستقبل کے لیے کچھ اقدامات کیے ہیں ان اقدامات سے طلبا کوحیرت انگیز فوائد مل جاتے ہیں ایک طرف وہ انگلش سیکھ رہے ہوتے ہیں جبکہ دوسری جانب یونیورسٹی انکو کمپیوٹر کی بیسک ٹریننگ بھی بالکل فری کروارہی ہوتی ہیں جس سے طالب علم کے اندر علم کے سمندر میں غوطہ لگانے کی امنگ پیدا ہوجاتی ہے وقت کے ساتھ ساتھ جب انگلش پر انکی تھوڑی بہت کمانڈ آجاتی ہے تو پھر سپوکن یونیورسٹی کی جانب سےڈیزائن کیا گیا فری لانسینگ کورس انکی زندگی بدل دیتا ہے.فری لانسینگ بیسک کورس یہاں طلبا کے لیے بلکل فری پڑھایا جاتا ہے جس میں گرائمر کی فری کلاس بھی شامل ہے.جب ایک طالب علم کو یہ پتہ لگ جاتا ہے کہ وہ یہاں نہ صرف انگلش سیکھ رہا ہے بلکہ کمپیوٹر و انٹرنیٹ کے اسرار ورموز سےبھی اُنکواگاہ رکھا جا رہا ہے تو پھر وہ اور ذیادہ محنت اور شوق سے محنت شروع کر دیتا ہے جس سے نہ ناصرف ادارے کی نیک نامی ہوتی ہیں بلکہ اُنکے کے والدین کی دعائیں بھی ادارے کی ترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کرتی ہیں..یہاں طلبا کو تیز رفتار ٹائپینگ کے ذریعے شروعات کروا دی جاتی ہیں اورپھر صرف تیس دنوں کے بعد طالب علم کو سمجھ آجاتی ہیں کہ انگلش کیوں‌ضروری ہے اور انگلش کے ساتھ کمپیوٹرو انٹرنیٹ کا کیا ربط ہے جب اس ربط و تعلق کے بارے میں‌طالب علم جان جاتا ہے تو پھر وہ پیچھے نہیں رہتا وہ پھر اپنے علم سے ناصرف کمانا شروع کر دیتا ہے بلکہ اپنے خاندان کا بوجھ بھی آسانی کے ساتھ اُٹھاتا ہے. یہاں تمام طلبا کو بینکینگ سسٹم اور آن لائن کارڈ استعمال کرنے کی بھی بھرپور ٹریننگ دی جاتی ہیں.جس سے طالب علم ماڈرن وجدید طریقوں سے اگاہ ہوجاتا ہے.پیسے کی ترسیل فزیکل طریقوں سے بدل کر آن لائن ٹرانزیکشن میں بدل جاتی ہیں.طلبا کو تین سے زائد آئن لائن کارڈ مہیا کیے جاتے ہیں جنکا طریقہ کار اور طریقہ استعمال مختلف ہوتا ہے.یعنی سپوکن یونیورسٹی ایک ہی وقت میں ایک طالب علم پر تین زاویوں سے کام کرتی ہیں اور پھر بہت ہی کم وقت میں گیارہ سالہ سباون جیسے بچے تاریخ رقم کر جاتے ہیں.سپوکن یونیورسٹی کو ہر ہفتے پائیونیر کمپنی کی جانب سے کارڈ بھیجھے جارہے ہیں اب تک تقریبا دو درجن سے زائد کارڈ جمع ہوگئے ہیں جسے بہت جلد طلبا میں تقسیم کر دیئے جائینگے جس کے لیے ایک چھوٹی سے سرمنی بھی رکی جائیگی ….سپوکن یونیورسٹی میڈیا سیل رپورٹ

اپنا تبصرہ بھیجیں